سینیٹ الیکشن سے قبل حکومت  نے  بڑی  چال  چل دی۔۔۔!!!پی ڈی  ایم میں شامل اہم ترین جماعت  حکومت  کے ساتھ  رابطے  میں  ، اپوزیشن  پر  بجلیاں  گرا  دینے والی خبر

سینیٹ الیکشن سے قبل حکومت نے بڑی چال چل دی۔۔۔!!!پی ڈی ایم میں شامل اہم ترین جماعت حکومت کے ساتھ رابطے میں ، اپوزیشن پر بجلیاں گرا دینے والی خبر

کوئٹہ (ویب  ڈیسک) 3 مارچ کو ہونے والے سینیٹ الیکشن سے قبل حکومت نے ناراض اتحادی کو منانے کی کوششیں تیز کردیں۔ تفصیلات کے مطابق صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں پاکستان تحریک انصاف کے رہنما صوبائی وزیر سردار یار محمد رند نے بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کے سربراہ سردار اختر مینگل سے پارلیمانی وفد کے ہمراہ ملاقات کی۔



بتایا گیا ہے کہ بی این پی اور پیٹی آئی کی اس ملاقات میں 3 مارچ کو ہونے والے سینیٹ الیکشن سمیت ملکی سیاسی صورتحال اور دیگر باہمی دلچسپی کے امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ، اس موقع پر سردار اختر مینگل کے ہمراہ ان کی پارٹی کے دیگر اہم اراکین اسمبلی بھی موجود تھے۔ دوسری طرف بلوچستان عوامی پارٹی سے اتحاد کے بعد بلوچستان سے تحریک انصاف کے واحد امیدوار نے اپنے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے ، بلوچستان سے تحریک انصاف کے واحد امیدوار ظہور آغا سینیٹ انتخابات سے دستبردار ہوگئے ، سینیٹ انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی واپس لینے کے آخری دن پی ٹی آئی امیدوار ظہور آغا نے جنرل نشت پر کاغذات نامزدگی واپس لینے کے لئے الیکشن کمیشن کے دفتر میں درخواست جمع کرادی ہے۔


بتایا گیا ہے کہ ظہور آغا ریٹرننگ آفیسر کے سامنے خود بھی پیش ہوئے اور بلوچستان عوامی پارٹی کے حق میں دستبردار ہوئے۔ بلوچستان عوامی پارٹی اس وقت آزاد امیدوار عبدلقادر کی حمایت کررہی ہے ۔ عبدالقادر سینیٹ انتخابات کے لیے پہلے ہی متنازع ہو چکے ہیں، انہیں پہلے پی ٹی آئی کی جانب سے ٹکٹ دیا گیا تاہم بعدازاں پی ٹی آئی بلوچستان کے امیدواروں کی مخالفت کے بعد ان سے ٹکٹ واپس لے لیا گیا تھا ۔


الیکشن کمیشن کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ بلوچستان اسمبلی میں تحریک انصاف کی 7 جبکہ بلوچستان عوامی پارٹی کے 24 ارکان ہیں۔ جے یو آئی کے 11، بلوچستان نیشنل پارٹی کے 10, عوامی نیشنل پارٹی کے 4، ہزار ڈیموکریٹک پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی عوامی کے دو دو، جموری وطن پارٹی اور پشتون خواہ ملی عوامی پارٹی اور مسلم لیگ نون کا ایک ایک رکن جبکہ ایک آزاد رکن ہیں، بلوچستان کی بارہ نشستوں پر اب 32 امیدواروں میں مقابلہ ہوگا۔








50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں