’’اگر آپ باز نہ آئے تو میں آپ کی حکومت کو اُلٹا دوں گا ۔۔‘‘جہانگیر ترین کی حکومت اور وزیراعظم کو کھلی دھمکی

’’اگر آپ باز نہ آئے تو میں آپ کی حکومت کو اُلٹا دوں گا ۔۔‘‘جہانگیر ترین کی حکومت اور وزیراعظم کو کھلی دھمکی

لاہور(نیوز ڈیسک )مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سینیٹر مصدق ملک نے کہا ہے کہ جہانگیر ترین کے اکاؤنٹس چینی اسکینڈل میں نہیں پرانے کیس میں منجمد کئے گئے ہیں، جہانگیر ترین نے حکومت اور وزیراعظم کو کھلی دھمکی دی ہے کہ اگر آپ باز نہ آئے تو میں آپ کی حکومت کو الٹا دوں گا۔
نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پتہ نہیں چل رہا کہ تحریک انصاف جہانگیر ترین کے ساتھ ہے یا مخالف، حکومتی وزراء کہتے ہیں کہ ادارے آزاد ہیں، ادارے خاک آزاد ہیں کہ وزیر پہلے بتادیتےہیں کہ فلاں پکڑا جائے گا اور وہ گرفتار ہوجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین کیخلاف کارروائی صرف وزیراعظم کے ساتھ جھگڑے کی وجہ سے ہورہی ہے، جب تک جہانگیر ترین وزیراعظم ہاؤس سے بے دخل نہیں ہوئے تھے تو عمران خان ان کا دفاع کیا کرتے تھے۔جہانگیر ترین کے اکاؤنٹس چینی اسکینڈل میں منجمد نہیں کئے گئے بلکہ ا ن کے خلاف مہنگے شیئر خریدنے کا مقدمہ درج کیا گیا، جہانگیر ترین نے حکومت اور وزیراعظم کو کھلی دھمکی دی ہے کہ اگر آپ باز نہ آئے تو میں آپ کی حکومت کو الٹا دوں گا۔دوسری جانبمسلم لیگ ن کے رہنما و سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) پر ان کے اپنے ہی اراکین کو اعتماد نہیں ہے۔ ایف بی آر کا چھٹا چیئرمین آگیا ہے، کسی کو نہیں معلوم ملک کا وزیر خزانہ کون ہے۔ ان خیالات کا ا ظہار انہوں نے ہفتہ کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ، سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حکومت نام کی کوئی چیز نہیں، جب تک ملکی نظام آئین کے تحت نہیں چلے گا ملک ترقی نہیں کرسکتا۔ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت گرانے سے کچھ نہیں ہوتا، جہانگیر ترین پر سیاسی مقدمات بنائے گئے، کوئی بھی تحریک اصولوں کے بغیر نہیں چل سکتی۔ان کا کہنا تھا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کا چھٹا چیئرمین آگیا ہے، کسی کو نہیں معلوم ملک کا وزیر خزانہ کون ہے۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ
بجلی کا بل 2 ہزار سے بڑھ کر 5 ہزار پر پہنچ گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین کے ساتھ گزشتہ روز 40 سے زیادہ حکومتی لوگ تھے جنہوں نے ان کے عشایئے میں شرکت کی ا ور حکومت پر کھلم کھلا تنقید کی اور اپنی ہی پارٹی پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا ۔دوسری جانب لیگی رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ عمران خان کی کرسی جہانگیر ترین کےہاتھ میں ہے، جہانگیر ترین کے عشائیے میں چالیس ارکان اسمبلی کی شرکت حکومت کے خلاف عدم اعتماد ہے۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ وفاقی حکومت سات ارکان کی برتری پر قائم ہے، عمران خان کی کرسی جہانگیر ترین کے ہاتھ میں ہے۔لیگی رہنما نے کہا کہ جہانگیر ترین کےعشایئےمیں چالیس ایم این ایز اور ایم پی ایز نے شرکت کی ، عشائیے میں شریک ارکان نےاپنی ہی حکومت کےخلاف عدم اعتمادکا اظہار کیا۔سابق وزیراعظم نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ملک میں سرکس لگا ہوا ہے، جہاں ہر روز ایک نیا تماشہ ہوتا ہے مگر یہ بھی یاد رکھیں کہ سرکس کا ہنٹر ہمیشہ مالک کے پاس ہی ہوتا ہے، حکومت جواب دے وہ کیا کررہی ہے؟۔شاہد خاقان عباسی نے ایک بر پھر نیب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اوچھے ہتھکنڈوں سے ثابت ہوچکا کہ نیب عوام کے نمائندوں کی آواز دبانے کا سیاسی ادارہ ہے۔لیگی رہنما کا مزید کہنا تھا کہ ہر روز ملک میں پیٹرول اور بجلی مہنگی ہو جاتی ہے، ہر دوسرے دن نیا ٹیکس لگادیا جاتاہے، یہ کسی کو نہیں پتہ ملک کا وزیرخزانہ کون ہے؟

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں