’تعلیمی ادارے ختم کرنے کا فیصلہ‘، شفقت محمود پھر ہیرو بن گئے

’تعلیمی ادارے ختم کرنے کا فیصلہ‘، شفقت محمود پھر ہیرو بن گئے

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی ) کی جانب سے ملک کے بعض اضلاع میں 11 اپریل تک تعلیمی ادارے بند رکھنے کے اعلان کے بعد وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود ایک بار پھر سوشل میڈیا پر ٹرینڈ کرنے لگے۔

یہ بھی پڑھیں ملک کے بعض اضلاع میں تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شفقت محمود کے حوالے سے مختلف اور دلچسپ میمز شیئر کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ ایک صارف نے اداکارہ حرا مانی کی ڈرامے میں روتی ہوئی تصویر شئیر کرتے ہوئے لکھا کہ پاکستان کے ان دیگر اضلاع کے طالبعلم جو اسکول بند ہونے کا انتظار کررہے تھے، خاص کر سندھ کے طالبعلم۔ ایک صارف نے بالی وڈ فلم پھر ہیرا پھیری کا ایک سین شیئر کرتے ہوئے کراچی سمیت دیگر اضلاع کو چھٹیاں نہ ملنے کے سبب محسوس کی جانے والی افسردگی کا اظہار کیا۔ ایک صارف نے آصف زرداری کی وائرل میم پر شفقت محمود کا چہرہ پیسٹ کرتے ہوئے کیپشن دیا ایسی میٹنگ رکھتے ہی نہیں جس میں طلبہ کو چھٹیاں نہ دیں۔ ایک صارف نے تو شفقت محمو د کی ویڈیو شیئر کرتے ہوئے یہ تک کہہ ڈالا کہ کنفرم جنتی ہے یہ۔ سمیر نامی صارف کا کہنا تھا کہ ہر چیز عارضی ہے لیکن شفقت کی شفقت مستقل ہے۔ نوشاد بلوچ نامی صارف نے دو قدم آگے بڑھ کر کمنٹ کیا اور ایک ٹیمپلیٹ شیئر کی جس پر لکھا تھا کہ تعلیمی ادارے ختم کرنے کا فیصلہ۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں