مریم کی حمزہ پر تنقید، نواز شریف بیٹی پر برہم ، خاموش رہنے کا حکم، سیٹ چھوڑ کر چلے گئے۔۔۔!!! ن لیگ کے خاندانی اجلاس کی  تہلکہ خیز اندرونی کہانی سامنے آگئی

مریم کی حمزہ پر تنقید، نواز شریف بیٹی پر برہم ، خاموش رہنے کا حکم، سیٹ چھوڑ کر چلے گئے۔۔۔!!! ن لیگ کے خاندانی اجلاس کی تہلکہ خیز اندرونی کہانی سامنے آگئی

لاہور (ویب ڈیسک)مسلم لیگ ن کے اہم اجلاس میں نواز شریف اپنی صاحبزادی مریم نواز پر اس وقت برہم ہوگئے جب انہوں نے حمزہ شہباز کے طریقِ سیاست پر اعتراض کیا۔ اجلاس کے دوران نواز شریف کئی بار برہم ہوئے اور سیٹ چھوڑ کر چلے گئے۔



نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کا خاندانی اجلاس ہوا جس میں شریف خاندان کے ارکان اور اہم پارٹی رہنماؤں نے شرکت کی۔ اجلاس میں مریم نواز، حمزہ شہباز، اسحاق ڈار اور نواز شریف بذریعہ ویڈیو لنک شریک ہوئے۔


اجلاس پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں حکمت عملی اختیار کرنے سے متعلق بلایا گیا تھا لیکن آپس کے اختلافات کا شکار ہوگیا۔ اجلاس کے دوران مریم نواز نے حمزہ شہباز کے سیاست کے طریقہ کار پر تنقید کی جس پر نواز شریف برہم ہوگئے اور انہیں کہا ’ خاموش ہوجاؤ اور حمزہ سے کچھ سیکھو۔‘ مریم نواز کی حمزہ پر تنقید کے بعد خاندان کے افراد میں بحث و مباحثہ شروع ہوگیا۔ اجلاس کے دوران نواز شریف کئی بار برہم ہوئے اور سیٹ چھوڑ کر چلے گئے۔


اجلاس کے دوران حمزہ شہباز نے مریم نواز کی ماضی کی بعض تقاریر کو تنقید کا نشانہ بنایا اور اس بات کو بھی ہائی لائٹ کیا کہ وہ طے شدہ فیصلوں سے ہٹ کر تقاریر کرتی ہیں۔



حمزہ شہباز نے کہا کہ اگر ہمیں اسی طرح سیاست کرنی ہے تو پارٹی تقسیم ہوجائے گی جس کا فائدہ دوسری جماعتوں کو ہوگا۔ انہوں نے مریم نواز سے کہا ’ سیاست میں میرے استاد نواز شریف ہیں، میں کیسے ایسی سیاست کروں گا، اس کا مطلب ہے کہ آپ اپنے والد پر اعتراض کر رہے ہیں۔‘






50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں