’’روپے کی قدر و قیمت میں بحالی کا سفر جاری ‘‘ ڈالر مزید سستا، ایک سال کی کم ترین سطح پر پہنچ گیا

’’روپے کی قدر و قیمت میں بحالی کا سفر جاری ‘‘ ڈالر مزید سستا، ایک سال کی کم ترین سطح پر پہنچ گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی ) ملک بھر میں پاکستانی روپیہ کی قدر میںاضافے کا سلسلہ جاری ہے ۔ کاروباری ہفتے کے دوسرے روز ڈالر کی قیمت میں مزید گر گئی ، 19پیسے مزید سستا ہو گیا جس کے بعد امریکی ڈالر ایک سال کی کم ترین سطح پر پہنچ گیا ہے ۔ اسی تناظر میں ملکی قرضوں میں 10کھرب روپے سے زائد کی کمی آئی ہے ۔ نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سماجی رابطے کی

ویب سائٹ ٹوئیٹر پر اسٹیٹ بینک پاکستان کی جانب سے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق رواں ہفتے کے دوسرے کاروباری روز بھی ڈالر کی قیمت میں 19پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے جس کے بعد ڈالر کی قیمت 158روپے سے گر کر 157روپے 85پیسے کا ہو گیا ہے ۔ گزشتہ سال مارچ 2020ءمیں ڈالر کی قیمت 157روپے 35پیسے تھی ۔ جبکہ اگست 2020ء میں ڈالر ملکی بلند ترین سطح 168روپے 43پیسے پر ریکارڈ کیا گیا تھا ۔ گزشتہ چھ ماہ کے دوران ڈالر کی قیمت میں دس روپے 58پیسے کی کمی آئی ہے ۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز انٹر بینک میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں 10پیسے کمی ہوئی جب کہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ملا جلا رجحان رہا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز انٹر بینک مارکیٹ میں پاکستانی روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں 10پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید158.10روپے سے گھٹ کر158روپے اور قیمت فروخت158.20روپے سے گھٹ کر158.10روپے ہو گئی جب کہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید158روپے سے بڑھ کر158.10روپے ہوگئی اور قیمت فروخت158.30روپے مستحکم رہی۔دیگر کرنسیوں میں یورو کی قیمت خرید190روپے سے گھٹ کر189.50روپے اور قیمت فروخت192روپے سے گھٹ کر 191روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاونڈ کی قیمت خرید219روپے سے گھٹ کر219.50روپے ہوگئی اور قیمت فروخت 221روپے مستحکم رہی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں