13 دسمبر کے بعد وزیراعظم عمران خان اور پاکستانیوں کو کیا تہلکہ خیز خوشخبری ملنے والی ہے ؟ شاندار پیشگوئی کر دی گئی

لاہور(ویب ڈیسک)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے کہ اپوزیشن وزیراعظم عمران خان سے ڈائیلاگ نہیں کرناچا ہتےتو بتائیں کس سے مذاکرات کرنا چاہتے ہیں؟ انہوں نے واضح کرتے ہوئے نتایا کہ یہ لوگ جن سےمذاکرات کرنا چاہتے ہیں وہ تو نواز شریف کے بیانیےکے مخالف ہیں۔تفصیلات کے مطابقریلوے ہیڈ کوارٹر لاہور میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید نے اپوزیشن کی جانب سے جنوری میں لانگ مارچ کرنے کے بیان پر کہا کہ شوق سے اسلام آباد تشریف لائیں جنوری میں سردی استقبال کریگی، اس وقت پی ڈی ایم بند گڑھے میں جارہی ہے، حالات چاہے جیسے بھی ہوں پی ڈی ایم بینفشری نہیں ہوگی۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ ایسے لوگ بھی ہیں جو ملک میں انتشار پھیلانے کیلئے سرمایہ کاری کر رہےہیں، یہ میڈیا میں صرف ٹکرز بنانےکی کوششیں کررہےہیں، سیاست کی بھوک ان کو کہیں کا نہیں چھوڑے گی، بالآخر ایسا وقت آئےگا کہ لوگ سیاست سےتنگ آجائیں گے،”ہاتھ آسمان پریا پاؤں زمین پر” ان کے استعفیٰ دینےسے اسمبلی کو نقصان نہیں پہنچتا، میرا ان سے سوال ہے کہ کیا آپ ایک شخص کیلئےملکی سیاست داؤپر لگاناچاہتےہیں؟ان کا کہنا تھا کہ میں تیرہ دسمبر کے بعد عمران خان کیلئےخوشخبریےدن دیکھ رہاہوں، تیرہ سے سولہدسمبر تک عمران خان کیلئے خوشخبریاں ہونگی، سینیٹ الیکشن کےبعد عمران خان نےاور مضبوط ہوجاناہے، عمران خان کہتا ہے کہ کسی کرپٹ ، بے ایمان کیساتھ ہاتھ نہیں ملاؤں گا، حکومت چھوڑدونگا، این آر او نہیں دونگا، سیاست میں مذاکرات کے دروازے کوئی بھی بند نہیں کیا کرتا۔شیخ رشید نے کہا کہ آصف زرداری حالات کی نوعیت سے واقف ہے، آصف زرداری چھٹابحری بیڑہ ہے وہ حالات کی نوعیت سےواقف ہے اور حالات سے فائدہ اٹھانے کی کوشش میں ہے، مجھے نہیں معلوم کہ پیپلزپارٹی سندھ سے استعفیٰ دے کر کہاں جائےگی، اس وقت پیپلزپارٹی اپنی تاش چھاتی سےلگا کرکھیل رہی ہے، بینظیرکو افسوس رہا کہ اس نے1985کےالیکشن میں حصہ کیوں نہیں لیا۔ اپوزیشن کو ایک بار پھر کہہ رہا ہوں کہ یہ ہلکی پھلکی موسیقی ہے ڈریں اس وقت سےجب اصلی مقدمات شروع ہونگے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں