اسرائیل کو منہ توڑ جواب۔۔ اسرائیلی کی میزائل اور جدید ہتھیار بنانےوالی فیکٹری کو اڑادیاگیا۔۔ یہ کام کس نے کہا؟آج کی بڑی خبر

اسرائیل کو منہ توڑ جواب۔۔ اسرائیلی کی میزائل اور جدید ہتھیار بنانےوالی فیکٹری کو اڑادیاگیا۔۔ یہ کام کس نے کہا؟آج کی بڑی خبر

اسرائیل (نیوز ڈیسک) اسرائیل کی میزائل اور مختلف اقسام کے جدید ہتھیار بنانے والی فیکٹری میں خوفناک دھماکے سے ‏علاقہ گونج اٹھا۔اسرائیلی میڈیا کے مطابق وسطی اسرائیل کے علاقے راملے میں قائم ٹومر فیکٹری میں زور دار ‏دھماکا ہوا۔دھماکے کی آواز دور دور تک سنی گئی۔ اسرائیلی حکام نے دھماکے میں کسی جانی نقصان کی تصدیق نہیں کی اور نہ ہی اس حادثے سے متعلق ‏تفصیلات بتائی ہیں۔اسرائیلی میڈیا کا کہنا ہے کہ ٹومر فیکٹری میں معمول کے میزائل تجزیے کے دوران زوردار
دھماکا ‏ہوا۔ اس فیکٹری میں راکٹ انجن تیار کیے جاتے ہیں جبکہ اوفیک سیٹلائٹ لانچر اور مختلف اقسام ‏کے میزائل رکھے جاتے ہیں۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے دھماکے کی آواز سنائی اور فضا میں بلند ہوتے شعلوں کو ‏دیکھا۔پاکستان بھر میں صف ماتم ۔۔ ایک دن میں اتنی اموات کہ یقین کرنا بھی مشکل۔۔۔اتنے افراد کو ایک ساتھ کیا ہواہے۔؟افسوسناک خبر اسلام آباد(نیوز ڈیسک)موذی وباء کی تیسری لہر نے پاکستان میں تباہی مچا دی ،گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید98اموات اور5ہزار857نئےکیسز سامنےآئے ہیں۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق پاکستان میں کورونا سے اموات کی مجموعی تعداد 16 ہزار698تک پہنچ گئی جبکہ متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 7 لاکھ 78ہزار238ہو گئی ہے۔ملک بھرمیں ایکٹو کیسز کی تعداد84 ہزار935ہے اور6لاکھ 76ہزار605افراد کورونا سے صحتیاب ہوچکے ہیں۔کورونا کے سبب سب سے زیادہ اموات پنجاب میں ہوئی ہیں جہاں7 ہزار718افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ سندھ میں 4 ہزار562، خیبر پختونخوا 2 ہزار990، اسلام آباد 649، گلگت بلتستان 104، بلوچستان میں 226 اور آزاد کشمیر میں 449 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔اسلام آباد میں کورونا کیسز کی تعداد 71ہزار533، خیبر پختونخوا ایک لاکھ 9ہزار704، پنجاب2لاکھ 79 ہزار 437، سندھ 2 لاکھ 75 ہزار81، بلوچستان21 ہزار242، آزاد کشمیر16ہزار26اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار215 افراد کورونا سے متاثر ہوچکے ہیں۔دوسری جانب کورونا وائرس پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے پاکستان کے 26 اضلاع ہائی رسک قرار دیئے گئے ہیں۔پاکستان میں کورونا کی ویکسینیشن جاری ہے اور تیسرے مرحلے میں50تا60 سال کے درمیان عمر والے افراد کو ویکسین لگائی جا رہی ہے۔ملک بھر میں ایڈلٹ ویکسینیشن مراکز قائم کیے جا چکے ہیں اور ویکسینیشن کا تمام تر عمل ڈیجیٹل میکنزم سے کنٹرول کیا جائے گا۔ویکسینیشن کے لیے پنجاب میں 189 اور سندھ میں 14 مراکز قائم کیے گئے ہیں جبکہ خیبر پختونخوا میں 280، بلوچستان میں 44 اور اسلام آباد میں 14 ویکسینیشن سینٹر قائم کیے جا چکے ہیں۔ آزاد کشمیر میں 25 اور گلگت بلتستان میں بھی 16 مراکز کے ذریعے ویکسینیشن کی جا رہی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں