پہلی مرتبہ فیصل آباد میں مزدور کم پڑ گئے ، ٹیکسٹائل انڈسٹری 24 گھنٹے فعال ، لوگ دوسرے شہروں سے فیصل آباد آنے لگے

پہلی مرتبہ فیصل آباد میں مزدور کم پڑ گئے ، ٹیکسٹائل انڈسٹری 24 گھنٹے فعال ، لوگ دوسرے شہروں سے فیصل آباد آنے لگے

فیصل آباد( ویب ڈیسک) فیصل آباد کی ٹیکسٹائل انڈسٹری 24 گھنٹے فعال ہے۔نہ صرف بے روزگارمزدوروں کوروزگارمل گیا بلکہ ضلع بھرمیں ڈیڑھ لاکھ سےزائد مزدور کم پڑگئے ہیں۔فیکٹری مالکان کےمطابق نہ صرف بند پڑی فیکڑیاں بحال ہوئی ہیں بلکہ 2 سے 3 ماہ میں 30 ہزارکے قریب نئی پاور لومزبھی لگا دی جائیں گی۔صنعت میں موجودہ بہتری سے

مقامی افراد کےعلاوہ دوسرےشہروں کے بےروزگار مزدوروں کو بھی نوکریاں مل رہی ہیں۔ خیال رہے کہ اس سے قبل دورہ فیصل آباد کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے کہا تھا کہ پنجاب میں تاریخ کا بہترین بلدیاتی نظام لارہے ہیں تاجر جائز نفع کمائیں، لیکن چینی مافیا کی طرح ناجائز منافع خوری نہ کریں،ہماری ایکسپورٹ بڑھنا شروع ہوگئی ہیں، حکومت کا کام صنعتکاروں کو سہولتیں فراہم کرنا

ہے،الیکشن سے پہلے یہاں آیا تو صنعتیں بند ہو رہی تھیں اور مشکل حالات تھے، لیکن آج اتنا کام ہے کہ یہاں ٹیکسٹائل کی لیبر نہیں مل رہی، انڈسٹری بڑھے گی تو قرضوں کا پہاڑ اتار سکیں گے، ایک دن مانچسٹر کہے گا فیصل آباد ہم سے آگے نکل گیا، صوبائی ترقیاتی فنڈز سے شہر ٹھیک نہیں ہوسکتے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے فیصل آباد میں ایکسپورٹرز اور صنعتکاروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وزیر اعظم نے کہا فیصل آباد میں ہائیکورٹ کے

قیام کے مطالبے سے متفق ہوں، ہائیکورٹ ہر ڈویژن کی سطح پر ہونی چاہیئے فیصل آباد جیسا شہر کبھی بھی صرف صوبائی ترقیاتی فنڈ سے ٹھیک نہیں ہوسکتا، صرف لاہور پر پیسہ خرچ کریں گے تو پنجاب کے باقی شہر پیچھے رہ جائیں گے، نئے نظام میں ہر شہر کا اپنا الیکشن ہوگا یعنی میئر کا براہ راست الیکشن ہوگا، بلواسطہ الیکشن

نہیں ہوگا کہ پہلے یوسی ناظم کا الیکشن ہو جو میئر منتخب کرے کیونکہ اس نظام میں پیسہ چلتا ہے، وہ نظام ناکام ہوچکا ہے، میئر اپنی کابینہ منتخب کرے گا جس میں ماہرین ہوں گے، مثلا آبی ماہرین اور ماہرین تعلیم، ایک دن آئے گا کہ

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں