عالم اسلام سے بڑی خوشخبری : ترک صدر اور سعودی بادشاہ کا ٹیلی فونک رابطہ ۔۔۔ دل خوش کردینے والا اعلان کردیا گیا

عالم اسلام سے بڑی خوشخبری : ترک صدر اور سعودی بادشاہ کا ٹیلی فونک رابطہ ۔۔۔ دل خوش کردینے والا اعلان کردیا گیا
استنبول (ویب ڈیسک )ترکی کے صدر رجب طیب اردوان اور سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبد العزیز آل سعود نے فون پر گفتگو کے دوران دوطرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ترکی کے صدارتی دفتر نے ایک تحریری بیان میں بتایا کہ

صدر اردوغان اور شاہ سلمان نے باہمی تعلقات کو بہتر بنانے اور مسائل کے حل کے لئے بات چیت کے
چینلز کو کھلا رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں رہنماں نے جی 20 رہنماوں کے سربراہی اجلاس پر بھی تبادلہ خیال کیا، جو رواں

سال سعودی عرب کی زیر صدارت 21 اور 22 نومبر کو منعقد ہوگا۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق یونیورسٹیز اساتذہ کی عالمی درجہ بندی میں کامسیٹس یونیورسٹی کا اعزاز، کامسیٹس یونیورسٹی کے 30 پروفیسرز دنیا کے 2 فیصد

بہترین ریسرچرز کی فہرست میں شامل ہوگئے۔؂تفصیلات کے مطابق امریکا کی سٹینفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے دنیا بھر کے اساتذہ کی بہترین ریسرچر کے حوالے سے فہرست مرتب کی، فہرست میں لاہور سمیت پاکستان بھر سے اساتذہ

کو شامل کیا گیا ہے، کامسیٹس یونیورسٹی سے ریاضی، انجینئرنگ، فزکس، کیمسٹری کے پروفیسرز دنیا کے بہترین 2 فیصد ریسرچرز میں شامل ہیں، ان اساتذہ کو تحقیقی جریدوں میں مقالہ جات کی اشاعت اور ان مقالہ جات کی علمی افادیت کی بناء پر منتخب کیا گیا۔کامسیٹس

یونیورسٹی سے ڈاکٹر محمد اسلم نور، ڈاکٹر غلام مرتضی، ڈاکٹر ندیم جاوید، ڈاکٹر آصف ظہور راجہ، ایس اے شہزاد، محمد شاہد، ڈاکٹر محمد قاسم اور ڈاکٹر محمد عثمان کا نام شامل ہے، جبکہ اختر حیات، محمد عثمان علی، عبد الرؤف،

ڈاکٹر خورشید ایوب، ڈاکٹر محمد اویس، ڈاکٹر جمشید اقبال، ڈاکٹر فرح مسعود کا نام بھی کامسیٹس یونیورسٹی سے شامل کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ قبل ازیں سٹینفورڈ یونیورسٹی کیلفورنیا نےدنیا کے بہترین محققین کی فہرست جاری کی تھی۔فہرست کے مطابق پنجاب یونیورسٹی کے

ڈین فیکلٹی آف مینجمنٹ سائنسز کے ڈاکٹر خالد محمود دنیا کے بہترین 2 فیصد محققین میں شامل ہوگئے ہیں۔ پنجاب یونیورسٹی کے ڈین فیکلٹی آف سائنس ڈاکٹر محمد شریف اور شعبہ میتھمیٹکس کے ڈاکٹر محمد اکرم بھی دنیا کے بہترین 2 فیصد محققین میں شامل ہوگئے ہیں۔

بہترین محققین کی عالمی درجہ بندی میں تمام شعبوں سے ایک لاکھ ساٹھ ہزار محققین کو شامل کیا گیا۔ پنجاب یونیورسٹی کے محققین کو اپنے تحقیقی مقالوں کی بین الاقوامی جانچ پڑتال کی بنیاد پر منتخب کیا گیا۔شاندار بین الاقوامی

کامیابی پر وائس چانسلر ڈاکٹر نیاز احمد نے اساتذہ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی انتظامیہ کے بین الاقوامی رینکنگ بہتر بنانے کے لئے اقدامات کے ثمرات ملنا شروع ہو چکے ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں