رونا دھونا شروع ۔۔۔ گلگت بلتستان الیکشن کے نتائج کو پیپلز پارٹی نے مسترد کر دیا ، بڑا مطالبہ

گلگت (ویب ڈیسک) گلگت بلتستان کے الیکشن میں تحریک انصاف نے کامیابی سمیٹ لی اور اب اس پر بلاول بھٹوزرداری کا موقف بھی آگیا۔مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر بلاول نے لکھا کہ ” میرا الیکشن چوری ہوگیا، میں جلد ہی گلگت بلتستان کے احتجاج میں شریک ہونے جارہا ہوں” یادرہے کہ گلگت بلتستان کا میدان

تحریک انصاف نے مار لیا، نو نشستوں پر فاتح، سات حلقوں میں آزاد امیدوار جیت گئے،پیپلز پارٹی چار اور ایم ڈبلیو ایم ایک نشست حاصل کرنے میں کامیاب، الیکشن امتحان میں ن لیگ کے صرف دو امیدوار پاس قرار پائے۔اس سے قبل مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا تھا کہ کیلبری کوئین اور فرزند زرداری اچھے بچوں کی طرح انتخابات میں اپنی شکست تسلیم کریں۔دوسری طرف ایک اور خبر کے مطابق جمعیت علماء اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ گلگت بلتستان میں ایک بار پھر 2018 کی تاریخ کو دہرایا گیا۔گلگت بلتستان میں انتخابات نہیں بندربانٹ ہوئی ہے۔ مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ سلیکٹیڈ

اور نا اہل حکمرانوں کو گلگت بلتستان کا رزلٹ ہضم نہیں کرنےدیں گے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کے بعد اب پی ٹی آئی کو گلگت بلتستان کا بیرا غرق نہیں کرنے دیں گے۔ مولانا فضل الرحمان نے گلگت بلتستان انتخابات کے نتائج کو پی ڈی ایم کے اجلاس میں اٹھانے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم نے ائندہ ہونے والے اجلاس میں متفقہ حکمت عملی طے کی جائے گی۔ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے گلگت بلتستان انتخابات کے نتائج پر کہاہے کہ پوری ریاستی طاقت، حکومتی اداروں، سرکاری مشینری کا جبر کے ہتھکنڈوں سے وفاداریاں تبدیل کرانے اور بدترین دھاندلی کے باوجود سادہ اکثریت بھی حاصل نہ کرنا شرمناک شکست ہے،
ہارنے والوں کو “لوٹا پارٹی” سے دگنی سیٹوں کا ملنا کٹھ پتلی پر عوام کا عدم اعتماد ہے۔ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے اپنے ٹوئٹ میں کہاہے کہ گلگت بلتستان میں پی ٹی آئی کا نہ پہلے کوئی وجود تھا نہ اب ہے،اسکو بھیک میں ملنے والی چند سیٹیں دھونس، دھاندلی، مسلم لیگ ن سے توڑے گئے امیدواروں اور سلیکٹرز کی مرہون منت ہیں، انہوں نے کہاکہ وفاق میں موجود حکمران جماعت کوپہلی بار یہاں ایسی شکست فاش ہوئی ہے، یہ شکست آنے والے دنوں کی کہانی سنارہی

ہے،لیگی رہنما کا اپنے ٹوئٹ میں مزید کہناتھا کہ پنجاب اور وفاق کی طرح سادہ اکثریت نہ ملنے کے باوجود تمھیں بیساکھیاں فراہم کر کے حکومت تو بنوا دی جائے گی لیکن اس آئینے میں اپنا چہرہ ضرور دیکھو جو گلگت بلتستان کے عوام نے تمہیں دکھایا ہے۔انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کے بہادر لوگو ! اس دھاندلی سے ہمت نہیں ہارنا، ریت کی یہ دیوار گرنے والی ہے۔ کٹھ پتلی کا کھیل ختم ہونے کو ہے۔

Reference: Hassan Nisar

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں