290ارب کے نئے ٹیکس ۔۔۔!!!تبدیلی سرکار کے دعوؤں کی نفی ، پاکستان کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیاگیا، تہلکہ خیز دعویٰ کردیا گیا

290ارب کے نئے ٹیکس ۔۔۔!!!تبدیلی سرکار کے دعوؤں کی نفی ، پاکستان کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیاگیا، تہلکہ خیز دعویٰ کردیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک) پیس اینڈ جسٹس سوسائٹی پاکستان کے چیئرمین میاں نعیم الدین نے کہا ہے کہ صدارتی آرڈیننس کے ذریعے 290ارب کے نئے ٹیکس تبدیلی اور جمہوریت کے دعویدار حکمرانوں کے دعووں کی نفی ہے، آئی ایم ایف کی تمام شرائط کو تسلیم کرکے ملک وقوم کو عملی طور پر عالمی مالیاتی اداروں کے پاس گروی رکھ دیا گیا ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےمیاں نعیم الدین نے کہا کہ حکومت نے گیس صارفین پر 105ارب روپے کا اضافہ بوجھ ڈالنے کی تیاری کرلی ،بجلی کے بعد گیس کی قیمتوں میں بھی97فیصد اضافے کی سفارش کی گئی ہے جو مہنگائی سے پسی عوام پر ظلم کے مترادف ہے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں وفاقی کابینہ نے آئی ایم ایف کی شرائط کے تحت بجلی کی قیمتوں میں اضافے کیلئے صدارتی آرڈیننس کی منظوری دی تھی، جس کے بعد عوام پر اربوں روپے کا مزید بوجھ ڈالا جائے گا،بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی صورت میں ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں بھی اضافہ ہو گا ، جس سے اشیاضروریہ کی قیمتیں بھی بڑھیں گی، حکومت کی جانب سے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کیلئے کوئی اہم اقدام نہیں اُٹھایا جا رہا جبکہ آئی ایم ایف کی ہر شرط کو قبول کر کے اس پر عمل پیرا ہوا جا رہا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں